84

پاکستان میں کیا جانے والا حملا وحشیانہ قتل عام ہے، جسکی سخت سے سخت مذمت کی جاتی ہے: مولانا تقی آغا،

پاکستان میں کیا جانے والا حملا وحشیانہ قتل عام ہے، جسکی سخت سے سخت مذمت کی جاتی ہے،
پاکستان میں ہزارہ شیعہ برادری پر کیا جانے والا حملا نہایت ہی افسوس ناک اور بدبختانه اور انسانیت سوز واقعہ ہے، جسکی ذمےداری داعش نے قبول کی ہے، اور داعش کا حملا یہ بات کا ثبوت ہے کہ قاسم سلیمانی سے اُنکا بغض ابھی تک باقی ہے، کیونکہ جس دن قاسم سلیمانی کو شہید کیا اسی دن یہ قتل عام ہوا ہے، بےگناہ شیعوں كو قتل کرکے، اپنا بغض نکالا جا رہا ہے، ہم اس حملے کی پُرزور مذمت کرتے ہیں، اور حکومت پاکستان و وزیرِ اعظم سے يه مطالبہ کرتے ہیں کہ پاکسان میں شیعوں کے قتل عام کی روک تھام کریں، اور قاتلوں کو انکے کیفرِ کردار تک پہنچائیں اور پسماندگان مقتولین کو اُنکا حق دیا جائے، اور شہداء کو قومی ہیرو کے طور پر پیش کیا جائے، جنھوں نے اپنی شہادت کا نذرانہ پیش کرکے مکتب حاج قاسم سلیمانی کو زندہ رکھا ہے
مولانا تقی آغا صاحب (صدر ساؤتھ انڈیا شیعہ علماء کونسل)

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں