Uncategorized

علم بی بی جلوس کیلئے سٹی پولیس کے وسیع تر انتظامات اجلاس


حیدرآباد۔28 جولائی (سفیر نیوز)9اگست کو منائے جانے والے “یوم عاشورہ” کے پیش نظر، سٹی پولیس کمشنر مسٹر سی وی آنند نے سالارجنگ میوزیم میں شیعہ کمیونٹی کے اراکین کے ساتھ ایک کوآرڈینیشن میٹنگ کی سیکورٹی اور ٹریفک اور دیگر امور پر ان کی رائے لی۔ میٹنگ کا آغاز ڈی سی پی سائوتھ زون سائی چیتنیا کی تقریر سے ہوا انہوں نے اپنے خطاب میں کہا کہ یوم عاشورہ امام حسین کی قربانی کو یاد دلاتا ہے ۔امام حسین تاریخ انسانیت کی وہ شخصیت ہے جن کو کسی بھی دور میں نہیں بھلایا جاسکتا۔ مولانا ڈاکٹر نثار حسین حیدرآقا صدر مجلس علماء و ذاکرین نے اپنے خطاب میں تمام محکمہ جات ،سیاسی جماعت ٹی آر ایس پارٹی خاص طور پر وزیر اعلی کے چندر شیکھر رائو،صدر مجلس بیرسٹر اسد الدین اویسی ،و اکبر الدین اویسی کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے محرم کے انتظامات کے لئے حکومت سے مسلسل نمائندگی کی اور انہوں نے کہا کہ امام حسین کسی ایک قوم کے نہیں بلکہ تمام کائنات کیلئے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ جہاں پر احساس ہوگا وہاں امام حسین نظر آیئنگے جہاں بھی انسانیت ہے وہاں حسین ہے اور پیام حسینی جہاں تک ہے وہاں تک امام حسین ہے۔اس موقع پر سٹی پولیس کمشنر نے انتظامات پر کمیونٹی ممبران سے خطاب کرتے ہوئے سی پی آنند نے یقین دلایا کہ سٹی پولیس تمام انتظامات کر رہی ہے اور کمیونٹی ممبران اور دیگر محکموں سے تعاون طلب کرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سٹی پولیس نے اندرونی میٹنگیں کیں اور وسیع بندوبسٹ انتظامات پر تبادلہ خیال کیا۔ عوام کی سیفٹی کیلئے ریپڈ ایکشن فورس کے ساتھ ساتھ، پولیس پلاٹون شی ٹیمیں تعینات کی جائیں گی۔سٹی پولیس کمشنر نے کہا کہ گزشتہ میٹنگ میں کمیونٹی ممبران کی طرف سے اٹھائے گئے زیادہ تر خدشات کو دور کر دیا گیا ہے۔ انہیں تلنگانہ حکومت کی طرف سے جلوس کے لئے ہاتھی فراہم کرنے کے لئے جاری کردہ جی او کے بارے میں جانکاری دی اور ان پر زور دیا کہ وہ جانور کے آرام اور حفاظت کے لئے اقدامات کریں۔انہوں نے ہاتھی کو جلوس کے دن سے 2-3 دن پہلے لانے کا مشورہ دیا تاکہ اسے اچھی طرح آرام اور ماحول مل سکے۔ پولیس نے جلوس کے دوران اس کے ارد گرد سخت گھیرا برقرار رکھنے کا مشورہ بھی دیا اور رائے دی کہ ویٹرنری ڈاکٹر، ٹرانکیولائزر دستیاب ہونا چاہیے۔ماتمی جلوس میں ہزاروں شیعہ مسلمان شرکت کریں گے، امام حسین کی شہادت کی 400 سال پرانی روایت ہے، بی بی کا علم، دبیر پورہ سے شروع ہو کر چارمینار گلزار گھر، پرانی حویل، دارالشفا ء سے ہوتاہوا چادر گھاٹ پر اختتام پذیر ہوگا۔ٹریفک ڈائیورشن پلان، پارکنگ کی جگہوں کے بارے میں جلد ہی مطلع کیا جائے گا اور ٹریفک ونگ کے سینئر افسران جلوس کی کڑی نگرانی کے لیے تعینات ہوں گے۔ یوم عاشورہ کے جلوس کی نقل و حرکت کو آسان بنانے کے لئے جو دبیر پورہ میں “بی بی کے الاوہ ” سے شروع ہوگا “علم” کیء راستہ کی رکاوٹوں کو دور کرنے کے لیے افسران روٹ سروے بھی کریں گے۔ سینئر افسران میدان میں جلوس کی نگرانی کریں گے اور جلوس کے روٹ کو سی سی ٹی وی کے ذریعے کور کیا جائے گا۔”چونکہ یہ یکجہتی کے اظہار کے لیے ماتمی جلوس ہے اور امام حسین کی عظیم قربانیوں کو یاد کرنے کا وقت ہے، آئیے ایک دوسرے پر غلبہ پانے کی کوشش کرنے کے بجائے اسے اپنے دل سے کریں۔ “مسٹر آنند نے واضح طور پر گروپوں کے درمیان ہونے والی لڑائی کا حوالہ دیتے ہوئے کہا جو کہ بدامنی اور امن و امان کے لیے مسائل پیدا کر رہا ہے۔ اس کو آپس میں بیٹھ کر حل کرنے کی ترغیب دی انہوں نے کہا کہ جلوس کے ساتھ ایمبولینس، میڈیکل ٹیمیں اور ایمرجنسی کٹس تیار رہیں گی۔ اس موقع پر موجود ایڈشنل کمشنر ڈی ایس چوہان،جوائنٹ کمشنر اسپیشل برانچ ویشوا پرساد،ڈی سی پی ٹرافک کروناکر، جی ایچ ایم سی زونل کمشنر اشوک سمراٹ، ایم ایل اے یاقوت پورہ احمد پاشاہ قادری ،مرزا ریاض الحسن آفندی ایم ایل سی ، علمدار والا جاہی کارپویٹر دبیر پورہ ،سہیل قادری کا رپوریٹر پتھر گٹی، صدر انجمن ماتمی گروہان نجف علی شوکت،نگران کار الاوہ بی بی سید اعجاز الدین،علمبردار علم بی بی و مجاور نعل مبارک پتھر گٹی میر قمر حسن رضوی، حامد حسین جعفری ، عباس موسوی بادشاہی عاشور خانہ، اور دیگر ذمیداران بھی موجود تھے۔ کمیونٹی ممبران نے ریاستی حکومت اور سٹی پولیس کی طرف سے کئے جا رہے انتظامات کی ستائش کی .اس موقع پر ایم ایل اے اور ایم ایل سی اور دیگر نے خطاب کیا۔نظامت کے فرائض انسپکٹر چھتری ناکہ عبدلقادر جیلانی نے انجام دی اور آخر میں ایڈ یشنل ڈی سی پی سائوتھ زون بی آنند نے تمام مہمانوں کا شکریہ ادا کیا ۔

Comment here